مرے دل میں آج کیا ہے تو کہے تو میں بتا دوں

مرے دل میں آج کیا ہے تو کہے تو میں بتا دوں

مرے دل میں آج کیا ہے تو کہے تو میں بتا دوں

تری زلف پھر سنواروں تری مانگ پھر سجا دوں

مجھے دیوتا بنا کر تری چاہتوں نے پوجا

مرا پیار کہہ رہا ہے میں تجھے خدا بنا دوں

کوئی ڈھونڈنے بھی آئے تو ہمیں نہ ڈھونڈ پائے

تو مجھے کہیں چھپا دے میں تجھے کہیں چھپا دوں

مرے بازوؤں میں آ کر ترا درد چین پائے

ترے گیسوؤں میں چھپ کر میں جہاں کے غم بھلا دوں

تری زلف پھر سنواروں تری مانگ پھر سجا دوں

مرے دل میں آج کیا ہے تو کہے تو میں بتا دوں

Leave a Comment

Pin It on Pinterest

Shares
Share This